Listed Price: Rs. 600, US $ 54
Our Price: Rs. 360
Shipment charges will be applied.

How to ORDER?

 

Pages: 464

Year: 2012

Binding: Hard

Size: 23"x36"/16

ISBN: 978-969-9400-23-0

Publisher: Al-Fath Publications

سلسلۂ نوشاہیّہ کی ادبی تاریخ

جلد اوّل: اُردو ادب

ڈاکٹر محمد اصغر یزدانی

Silsala -e Naushahiyya ki Adabi Tarikh, Dr. Muhammad Asghar Yazdani

ڈاکٹر محمد اصغر یزدانی کی سلسلۂ نوشاہیہ کی ادبی تاریخ اس اعتبار سے منفرد ہے کہ یہ برّصغیر میں تصوّف کے ایک اہم سلسلہ (قادریہ) نوشاہیہ کے ادیبوں، شاعروں اور مصنّفوں کے حالات اور تصانیف و آثارکے تعارف و تجزیہ پر مستقل بالذات تصنیف ہے اور اسے ادب کی تاریخ نویسی کے اصول اورشعور کے مطابق لکھا گیاہے ۔ اس میں متعلقہ افراد کے حالاتِ زندگی پرتحقیق کی گئی ہے اور ان کی تصانیف ،آثار اورکلام کا ناقدانہ جائزہ لیا گیا ہے۔ اہم کتب کا راست مطالعہ کر کے نتایج پیش کیے گئے ہیں اور ان کی ادبی و علمی حیثیت متعین کی گئی ہے۔سلسلۂ نوشاہیہ کی ادبی تاریخ نویسی کا ایک دَور سیّد شریف احمدشرافت نوشاہی ؒ(۱۹۰۷۔۱۹۸۳ء ) پر ختم ہوتا ہے۔ ڈاکٹریزدانی کی یہ تصنیف اس سے آگے کا قدم ہے کیوں کہ اس میں۱۹۸۳ء کے مابعد منظر عام پر آنے والے سلسلۂ نوشاہیہ کے ادب کا بھی تفصیل سے ذکر ملتا ہے اور یہی تازہ کاری اس کتاب کو مفیدتربنادیتی ہے۔

ڈاکٹر یزدانی یکم اپریل۱۹۶۵ء کوچک 4/1-R،تحصیل ہارون آباد،ضلع بہاول نگر میں پیدا ہوئے۔۱۹۸۹ء میں اسلامیہ یونیورسٹی،بہاول پور سے ایم اے (اُردو)کا امتحان اوّل بدرجۂ اوّل پاس کرکے، طلائی تمغہ حاصل کیا۔۲۰۰۹ء میںجامعۂ کراچی سے اُردو ادب میں سلسلۂ نوشاہیہ کی اُردو خدمات عنوان کے تحت تحقیقی مقالہ لکھ کر ڈاکٹریٹ مکمل کی۔زیر نظر کتاب اُسی مقالے کی نظرثانی شدہ اور توسیع یافتہ شکل ہے۔ ڈاکٹر یزدانی اب اسلامیہ کالج(سول لائنز)،لاہور کے شعبۂ اُردومیں بطور اسٹنٹ پروفیسر خدمات سر انجام دے رہے ہیں۔ملکی جرائد میں ان کے مقالات شایع ہوتے رہتے ہیں۔ اُردو ادب کے ساتھ ساتھ پنجابی ادب کا بھی مطالعہ رکھتے ہیں۔

 

 


Table of Contents | فہرست

Table of Contents is in PDF Format.
 

 


Preface | پیش لفظ

سلسلۂ نوشاہیہ کے مورثِ اعلیٰ شیخ الاسلام حضرت حاجی محمد نوشہ گنج بخشؒ قادری (۹۵۹۔۱۰۶۴ھ/ ۱۵۵۲۔ ۱۶۵۴ء) نے اکبری الحاد کے ظلمت انگیز دَور میں حق و صداقت کی قندیل فروزاں کی اور ایمان و ایقان کی پُرنور شعاعوں سے لاکھوں قلوب و اذہان کو منور فرمایا۔ سلسلۂ نوشاہیہ سے وابستہ مشائخ عظام نے ایک طرف اپنے عرفانی کمالات، انسان دوستی، اخلاق و محبت اور تربیتِ کردار کے ذریعے اخلاقی قدروں کو بلند کیا تو دوسری طرف تصنیف و تالیف کے ذریعے اذہان کو مجلّٰی و مصفّٰی کرنے کا فریضہ بھی سرانجام دیا۔ حُبِ دنیا اور حُبِ دولت سے آزاد اِن صوفیہ کرام کی مساعی جمیلہ کے کیف آگیں اثرات سے روحانی برکات کے ساتھ ساتھ زبان و ادب نے بھی فروغ پایا۔ ان اربابِ علم و فضل نے مختلف زبانوں میں نظم و نثر کے ایسے فن پارے تخلیق کیے کہ صدیاں گذر جانے کے بعد وہ آج بھی اپنی جاذبیت، خوش بیانی اور گہری معنویت کے سبب دنیائے علم و معرفت میں راہ نما کا درجہ رکھتے ہیں۔ اس گراںقدر علمی خزانے میں اُردو زبان میں تصنیف کیے گئے شاہکار زیرِ نظر کتاب کا بنیادی موضوع ہے ۔

نوشاہی مصنّفین کے اُردو زبان میں مصنّفہ و مؤلّفہ آثار، کثیر تعداد میں ہیں۔ اس علمی و ادبی ذخیرے میں سے مطبوعہ اہم کتب کا انتخاب کیا گیا۔ کتاب کے باب چہارم میں ان اہم اُردو تصانیف کا تفصیلی ذکر کیا گیا ہے۔ جن اُردو کتب کا اِس باب میں ذکر نہیں ہوا اُن کو باب سوم میں مصنّفین کی تصنیفی خدمات کے ذیل میں درج کر دیا گیا ہے۔ کئی ایسے مختصر رسالے / پمفلٹ، جن میں درج معلومات اُس مصنف کی دیگر کتابوں میں بھی بیان ہوئی ہیں، ان کا ذکر کہیں ضروری نہیں سمجھا گیا، اس مقالے کی تصنیف کے لیے طے شدہ ضابطے کا تقاضا بھی یہی تھا۔ کچھ ایسے مختصر کتابچوں سے بھی حذر کیا گیا ہے جن کا مقصد اُردو زبان یا علم کی کوئی خدمت نہیں بلکہ ان کے فتنہ انگیز مندرجات کسی ذاتی مخاصمت کا نتیجہ دکھائی دیتے تھے۔ 

 

 


Index | اشاریہ

Index is in PDF Format.

Related Titles